Home / pakistan News / حکومت کی خواہش پر مستعفی,گورنر اسٹیٹ بینک اور چیئرمین ایف بی آر عہدوں سے فارغ

حکومت کی خواہش پر مستعفی,گورنر اسٹیٹ بینک اور چیئرمین ایف بی آر عہدوں سے فارغ

اسلام آباد  حکومت نے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے ایف بی آر کے چئیر مین کو منصب سے ہٹا دیا ہے جبکہ گورنر سٹیٹ بینک وفاقی حکومت کی خواہش پر منصب سے مستعفی ہو گئے۔
گورنر اسٹیٹ بینک اور فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے چیئرمین کو عہدوں سے ہٹانے کا فیصلہ پہلے ہی ہوچکا تھا البتہ 
بعض وجوہات کی بنا پر فیصلے میں‌تاخیر ہوئی۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت نے عہدوں سے برطرفی کا فیصلہ اقتصادی صورتحال کے پیش نظر کیا اور دونوں کو ہٹانے کا فیصلہ سابق وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کے دور میں ہوچکا تھا۔ دوسری جانب بینک دولت پاکستان کے ترجمان نے گورنر اسٹیٹ بینک طارق باجوہ کو عہدے سے ہٹانے کی تصدیق بھی کردی۔

ذرائع کے مطابق ڈالر کی قدر میں مسلسل اضافے اور روپے کی قدر گرنے کی وجہ سے گورنر اسٹیٹ بینک کو عہدے سے ہٹایا گیا جبکہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو میں اصلاحات نہ ہونے پر چیئرمین ایف بی آر کو سبک دوش کیا گیا۔ ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ ’’ وزیراعظم کئی ماہ سےدونوں عہدیداروں کی کارکردگی سےناخوش تھے اور سابق وزیر خزانہ اسد عمر بھی ہٹانے کی سفارش کرچکے تھے‘۔

طارق باجوہ 2017 میں گورنر بنے تھے اور وہ بینک دولت پاکستان کے 19ویں گورنر تھے،اس سے قبل وہ سیکرٹری خزانہ اور چئیر مین ایف بی آر بھی رہ چکے تھے ،چئیرمین ایف بی آر کو ہٹانے کا فیصلہ بھی کچھ عرصہ قبل ہو چکا تھا ،ان کے کچھ معاملات جن میں ایمینسٹی سکیم بھی شامل ہے نقطہ نظر مختلف تھا ۔وزیر آعظم 

بہت جلد ان عہدوں پر نئی تقرریاں کریں گے کیونکہ آئی ایم ایف کے ساتھ بات چیت چل رہی ہے جو ،اب پالیسی سطح پر جانے والی ہے جس میں کارکردگی اہداف کو تعین ہونا ہے ۔ذرائع نے بتایا ہے کہ مشیر خزانہ کی مشاورت سے دونوں کو عہدوں سے ہٹایا گیا۔ذرائع نے بتایا ہے کہ ان دو اہم عہدوں پر تقرری کے لئے مشاورت ہو رہی ہے اور مختلف ناموں پر غور کیا جا رہا ہے۔

About admin

Check Also

آصف علی زرداری کی گرفتار,اور کل یوم سیاہ منانےکا اعلان

پیپلز پارٹی سندھ نے آصف زرداری کی گرفتاری پر کل یوم سیاہ منانے کا اعلان …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *